0

عمران نے خود سپریم کورٹ کے اکاؤنٹ میں رقم ایڈجسٹ کرنے کا فیصلہ کیا، فروغ

190 ڈالر پاؤنڈ کیس میں عمران خان نے پہلے کابینہ کا سہارا لیا اور اب اپنے دور کے وزیرِ قانون فروغ نسیم پر ذمہ دار ڈال دی—فوٹو:فائل
190 ڈالر پاؤنڈ کیس میں عمران خان نے پہلے کابینہ کا سہارا لیا اور اب اپنے دور کے وزیرِ قانون فروغ نسیم پر ذمہ دار ڈال دی—فوٹو:فائل

سابق وزیر اعظم عمران قانون وزیر اعظم فروغ نسیم نے 190 ڈالر پنڈز کیس میں سابق وزیر اعظم خان کے دعوے کو مسترد کر دیا۔

190 پاؤنڈز کیس میں سابق وزیر اعظم عمران خان نے پہلے اپنے وزیر اعظم کا سہارا لیا اور قانونِ فروغ نسیم پر ذمہ دارانہ کردار ادا کرتے ہوئے کہا کہ وزیرِ اعظم کے قانون سے مشورے کے لیے کہا کہ عدالت کے اکاؤنٹ میں درست ثابت ہوا۔

اس سے جیو نیوز کے سابق وزیرِ قانون فروغ نسیم نے عمران خان کے دعوے کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ایسا کوئی ایجنڈا عمران خان کو نہیں دیا اور اُس کی کابینہ کے اجلاس میں یہ معاہدہ شامل نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وزرات قانون کی طرف سے کوئی بھی سمری نہیں بھیجی گئی تھی، نہ ہی عمران خان کو میری وزارت نے کہا تھا کہ اگر 190 ڈالر پاونڈز پاکستان کے لیے نہیں تو یہ برطانیہ میں ہی رہنا چاہیے۔

فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ عمران خان نے خود 190 ڈالر پنڈزسپریم کورٹ اکاؤنٹ میں فیصلہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، وزارت قانون نے انہیں کوئی فائدہ نہیں دیا ہے اور اس کے بارے میں کوئی سچائی اس پر موجود ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply