0

عمران خان نے عاصم منیر کو مینج کرنے کا کہا تھا لیکن انہوں نے منع کر دیا: واوڈا

عمران خان نے اس وقت آئی ایس پی ڈی جی آئی جنرل عاصم منیر کو ایمانداری سے برطرف کرنے پر کہا تھا: سابق پی ٹی آئی— فوٹو: فائل
عمران خان نے اس وقت آئی ایس پی ڈی جی آئی جنرل عاصم منیر کو ایمانداری سے برطرف کرنے پر کہا تھا: سابق پی ٹی آئی— فوٹو: فائل

تحریک انصاف کے سابق رہنما اور رکن قومی اسمبلی کے فیصل واوڈا نے کہا ہے کہ جب عمران خان عاصم تھے تو انہوں نے اس وقت ڈی جی آئی ایس آئی جنرل منیر کو ایمانداری سے کام کرنے پر بریفنگ دی۔

فیصل واڈا نے جیو کے پروگرام ‘آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ’ گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آئی پی ٹی آئی نے دھرنا عاصم منیر کو نظر انداز کرنے سے سوال کیا۔

فیصل واوڈا نے بتایا کہ انہوں نے عاصم منیر کو بتایا کہ آپ جا رہے ہیں آپ کو نقصان پہنچانے کے لیے، انہوں نے کہا کہ واوڈا مجھے اپنے ملک سے بے ایمانی کا سامنا کرنا پڑا؟

فیصل واڈا نے مزید بتایا کہ عاصم منیر نے عمران خان کو شواہد پیش کر دیا، اگلے دن عمران خان نے برطرف دیکھا۔

فیصل کا واڈا نے کہا کہ عمران نے اس وقت ڈی جی آئی ایس آئی عاصم منیر خان کو مینج کرنے کے لیے کہا تھا لیکن عاصم منیر نے یہ بات منع کر دی تھی کہ فوج مداخلت نہیں کر سکتی، عاصم منیر عمران خان نے کہا۔ یہ جمہوریہ نم، جمہوری طریقے سے

فیصل واڈا نے دعویٰ کیا کہ گھڑی سکینڈل میں عمران خان کو تین کروڑ روپے ملے تھے، باقی پچیس عثمان کروڑ روپے پر سب نے ملک کرلئے، شہزاد اکبر اکلے نہیں تھے، انہیں خاص آدمی کی سپورٹ، بزدار کے ڈیو، ویڈیو شواہد خان صاحب کو دکھائے گئے تھے، بزدار کے آڈیو، وڈیو شواہد خان صاحب کو دینے کے لیے کیمرے کے اورلوگ بھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply