0

عاصم منیر نے اہلیہ کی کرپشن کے کوئی ثبوت نہیں دکھائے، نہ ہی اس وجہ سے عہدے سے ہٹایا: عمران

عمران خان نے عاصم منیر کو بشریٰ بی بی کرپشن کیس کی تحقیقات پر آئی ایس آئی کی سربراہی سے ہٹایا تھا: سپریم جریٰ کا دعویٰ— فوٹو:فائل
عمران خان نے عاصم منیر کو بشریٰ بی بی کرپشن کیس کی تحقیقات پر آئی ایس آئی کی سربراہی سے ہٹایا تھا: سپریم جریٰ کا دعویٰ— فوٹو:فائل

سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ موجودہ جنرل عاصم منیر نے کہا ہے کہ جنرل (ڈی جی) نے کہا ہے کہ انٹیلیجنس ایجنسی (آئی ایس آئی) نہ بشریٰ بی متوازی کوئی ثبوت نہ دکھائے ۔

سپریم جریدے نے خبر دی ہے کہ خان نے عاصم منیر کو بشریٰ بی بی کرپشن کیس کی تحقیقات کے لیے عمران پر آئی کی سربراہی سے ہٹایا۔

اخبار کے مطابق عاصم منیر نے عمران خان کو ان کے اہلیہ اور ان کے حلقہ احباب کے خلاف مذمتی تحقیقات کا کہا۔

تاہم خبر کا لنک شیئر کرتے ہوئے عمران خان نے تردید کی اور کہا کہ یہ دعویٰ بالکل غلط ہے۔

انہوں نے کہا کہ جنرل عاصم نے مجھے میری اہلیہ کی حمایت میں کوئی شواہد ہی نہیں دکھایا۔

خیال رہے کہ 10 اکتوبر 2018 کو جنرل عاصم منیر کو آئی ایس آئی نے جواب دیا اور پھر 16 جون 2019 کو لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کو آئی ایس آئی نے جواب دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply