0

آپ کی وہ عام غلطی جو بے خوابی کے شکار ہو کر رہ جاتی ہے۔

یہ بات ایک نئی طبی تحقیق میں آئی / فائل فوٹو
یہ بات ایک نئی طبی تحقیق میں آئی / فائل فوٹو

کیا اکثر بستر پر لیٹنے کے بعد رات نہیں آتی؟ تو ہو سکتا ہے کہ آپ کی ایک عام غلطی بے خوابی کا شکار ہو رہی ہے۔

یہ بات امریکہ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔

انڈیانا یونیورسٹی کی تحقیق میں آپ کو تلاش کرنے کی کوشش کے دوران بار بار دیکھنے کو شکار کو بے خوابی کا نشانہ بنایا جا سکتا ہے۔

اس تحقیق میں بھگوان لگنا 5 ہزار افراد کے ڈیٹا کی جانچ پڑتال کی گئی تھی جو بے خوابی کی شکار تھی۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ 4 میں سے 22 فیصد بالغ افراد بے خوابی کے ساتھ ملاقات کرتے ہیں جس کے نتیجے میں طویل المعیاد بنیادوں پر طبی مسائل جیسے دل کی شریانوں کے امراض، دماغی بیماری اور ڈپریشن کا خطرہ بڑھتا ہے۔

تحقیق کے دوران بے خوابی، نیند کی نیندیں استعمال کرنے اور کوشش کرنے کی کوشش کے دوران رویوں کے سوالنامے بھروائے

انہوں نے بتایا کہ اس دوران دیکھنے کی عادت سے تلاش کرنے والے متاثر ہوتے ہیں اور بے خوابی کا خطرہ بڑھتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ لوگ سوچتے ہیں کہ ان کی نیند پوری نہیں ہوئی اور اس کی کوشش کے دوران بار بار ہوتے ہیں، لیکن یہ سرگرمی ہوتی ہے تلاش میں مددگار ثابت نہیں ہوتا۔

محققین کا کہنا تھا کہ بار بار دیکھنے سے تناؤ میں اضافہ ہوتا ہے اور تناؤ بہت زیادہ، سونا اتنا مشکل ہو جائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ جب خوابیدگی بڑھنے کے دوران لگتا ہے تو لوگ آپ کا استعمال کرتے ہیں تاکہ نیند پر کنٹرول حاصل کریں۔

تحقیق میں کہا گیا ہے کہ لوگوں کو دیکھنے کی کوشش کے دوران گریز کرنا چاہیے تاکہ وہ خوابیدگی سے بچیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply