0

ہائی بلڈ کی علامات کیا ہوتی ہیں اور اس سے آسان طریقے کیا ہوتے ہیں؟

اس خاموش قاتل مریض کا دنیا بھر میں کروڑوں افراد کو ہوتا ہے / تصاویر
اس خاموش قاتل مریض کا دنیا بھر میں کروڑوں افراد کو ہوتا ہے / تصاویر

خون کا خون یا دردمندانہ کہتا ہے کہ یہ شریانوں سے معلوم ہوتا ہے کہ خون میں خون گزر رہا ہے۔

ہائی بلڈ پریشر یا بلڈ پریشر کا رابطہ اس وقت ہوتا ہے جب ان کے خون کا خون مسلسل بہت زیادہ ہوتا ہے۔

ہائی بلڈ پریشر کو خاموش قاتل قرار دیا جاتا ہے کیونکہ شکار کو اکثر اس کا علم نہیں ہوتا۔

ہائی بلڈ آپریٹنگ کیا ہوتا ہے؟

کی شریانیں تنگ ہو جائیں تو خون کا بہاؤ محدود ہو جاتا ہے۔

شریانیں بہت تنگ ہوں میں اتنا کم اور اتنا زیادہ سمجھتا ہوں

مختلف طبی مسائل جیسے امراض قلب، ہارٹ اٹیک یا فالج کا وقت بن سکتا ہے۔

بلکل آپ کا مسئلہ بہت عام ہے اور پاکستان دنیا بھر میں کروڑوں افراد کے اس شکار کی شکار ہے۔

ہائی بلیڈر سے خون کی شریان اور اعضا بالخصوص دماغ، دل، اور نتائج کو نقصان پہنچاتا ہے۔

دباؤ خون کی تشخیص جلد ہونے سے اس کو کنٹرول کرنے میں مدد ملتی ہے۔

آپ کو آپ کے طرز عمل پر قابو پانے اور طرز زندگی میں چند تبدیلیاں کرنا ممکن ہے اور اگر اس کی روک تھام نہ کی جائے تو ہارٹ اٹیک اور فالج متعدد امراض سے ملاقات کرتے ہیں۔

صحت مند افراد کا احترام کرنا ضروری ہے؟

بلڈ پریشر کی جانچ پڑتال کے 2 پیمانے ہیں، ایک خون کا دباؤ (سیسٹولک بلڈ پریشر) جو اوپری نقطہ نظر کے نمبر کا اظہار کرتا ہے۔

بنیادی طور پر دل دھڑکنے سے جسم کے مختلف اعضاء تک انقباض کے خطرے کو ظاہر کرتا ہے۔

دوسرا پیمانہ انبساطی مانہ (ڈائیسٹولک بلڈ پریشر) ہے جو انسانی دھکنوں کے درمیان وقفے اور آرام کے نمبر ظاہر کرتا ہے۔

تو یہ جان آپ کی صحت مند افراد کا شکریہ 120/80 ہونا

اگر کسی فرد کی حمایت 130/80 ہے تو یہ سمجھنا چاہیے کہ اس میں آپ کو یقین دلانا ہے

اسی طرح اگر بلاامتیاز 140/9 ہو تو یہ اعلی درجے کی ذمہ داری قبول کرنے کی طرف بڑھنے کا عندیہ۔

یہ نمبر آپ کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔

علامات کیا ہیں؟

مسلسل اوپر کیا جانچنے سے کہا جاتا ہے کہ عام طور پر بلڈ پریشر کے علامات ظاہر نہیں ہوتے اور اسے خاموش قاتل بھی کہا جاتا ہے۔

تاہم اعلی درجے کی معیار کی سطح پر بڑھنے سے جو علامات ظاہر ہوتی ہیں وہ درج ذیل ہیں۔

شاہ ہیڈ۔

ناک سے خون بہن۔

تھکاوٹ یا الجھن

بینائی کے مسائل۔

سینے میں استعمال۔

مشکلات میں۔

دل کی دھڑکن میں بےترتیبی۔

پیشاب میں خون آنا۔

سینے، گردن یا کانوں پر راستے۔

اس سے ہٹ کر بھی کئی لوگوں کو کچھ ایسے علامات کا سامنا کرنا پڑتا ہے جو آپ کو یقین دلانے کے لیے آپ کو یقین دلاتا ہے لیکن آپ سے کچھ مشکل ہوتا ہے۔

سراکانا۔

الجھن محسوس ہونا۔

بہت زیادہ پسینہ بہن۔

مشکلات میں۔

بہت زیادہ سرخ ہوجانا۔

تلاش میں خون کی رنگت کے دھب

آپ کو یقین دلانا کیوں ہوتا ہے؟

متعدد ہائی آئٹمز کو نشانہ بناتے ہوئے کردار ادا کرتے ہیں۔

ان عناصر میں جینز، عمر، نسل، موٹاپا، الکحل کا استعمال، زیادہ وقت گزارنا، نمونہ اور نمک کا زیادہ استعمال قابل ذکر ہے۔

مخصوض امراض جیسے امراض کے امراض، خراٹے، دل کے مسائل، تھائی رائیڈ مسائل اور مخصوص استعمال سے بھی اس بیماری کا خطرہ بڑھتا ہے۔

خود کو ہائی بلڈنگ کا شکار کریں کیسے بچیں؟

طرز زندگی میں مثبت تبدیلیوں سے عناصر کو کنٹرول کرنے میں مدد مل سکتی ہے جو دباؤ کا خون بنتے ہیں، جن میں چند عام درج ذیل ہیں۔

دل کی صحت کے لیے ذہنی غذا

دل کی صحت کے لیے مفید غذا کے خون کے صحت کی کمزوری کے لیے مثبت ثابت ہوتی ہے جبکہ اعلیٰ درجے کی دعاؤں پر اسے کنٹرول کرنے میں مدد فراہم کی جاتی ہے۔

پھلوں، سبزیوں، سالم اناج، چکن، مچھلی، انڈے اور گریوں کے تعاون سے زیتون کے تیل پر مشتمل غذا دل کو صحت مند رکھنے میں مدد فراہم کرتے ہیں۔

سرگرمیاں بڑھائیں

جسمانی وزن میں کمی کے ساتھ ورزش کرنے سے بھی امدادی قوتوں کو قدرتی طریقے سے کم کرنا ممکن ہے جبکہ دل شریانوں کا نظام مضبوط ہوتا ہے۔

ماہرین کے مطابق ہر ہفتہ 15 منٹ ورزش کو عادت بنانے کے لیے رضامندی کے ساتھ ہر ہفتے 5 بار 30 منٹ ورزش

جسمانی وزن کو کنٹرول میں رکھیں

اگر آپ موٹاپے کے شکار ہیں تو صحت بخش غذا اور مشقت سے وزن میں کمی کی وجہ سے آپ کو کم کرنے میں مدد ملتی ہے۔

تناؤ کو کنٹرول کریں۔

بہت زیادہ تناؤ کی شکار افراد میں ہائی بلڈ پریشر کی شکایت عام ہوتی ہے تو اس کی روک تھام کے لیے یوگا، مراقبہ، گہری سانیں لینا، مساج اور مسلز کو مدد مل سکتی ہے۔

تمباکو نوشی سے گریز

تمباکو نوشی عادی افراد میں اعلی درجے کی حمایت کرتا ہے اور آپ کا مسئلہ عام ہوتا ہے ڈاکٹروں کی طرف سے آپ کو تمباکو نوشی چھوڑنے کا موقع دیا جاتا ہے۔

تمباکو میں موجود کیمیکلز جسم سے ٹشوز کو نقصان پہنچاتا ہے جبکہ خون کی شریانوں کی دیواریں سخت ہوتی ہیں۔

الکحل کے استعمال سے بھی بلاک کا رابطہ ہوتا ہے تو اس سے گریز کرنا بھی ضروری ہے۔

چینی کا استعمال کم کریں۔

میٹھی اشیا جیسے سوڈا یا دیگر کا کم استعمال کرنا چاہیے کیونکہ چینی کے زیادہ استعمال سے بھی کمزوری کی سطح بڑھ رہی ہے۔

نمک کا کم استعمال

خون کے مریض یا امراض قلب کے قریب سے دوچار افراد کو غذا میں نمک کی مقدار کم کرنے کا کام دیا جاتا ہے۔

نمک کے زیادہ استعمال سے بھی ہائی بلڈ پریشر میں اضافہ ہوتا ہے یا آپ اس کی شکار ہو سکتے ہیں۔

آپ کو کس عمر میں چیک کرنا عادت بنائیں؟

اس بیماری کی تشخیص ابتدائی مرحلے میں ہونا۔

آپ کی وجہ یہ ہے کہ 40 سال کی عمر کے بعد ہر سال کم از کم ایک بار دعا کرنے والوں کو چیک کرنا عادت بنالیں۔

نوٹ: یہ مضمون طبی جریدوں میں شائع کی گئی تفصیلات پر، قارین اسباق سے اپنے معالج سے بھی ضروری ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply