0

’نیتن یاہو کی حکومت تبدیل کرنے کا وقت آگیا‘

اسرائیلی اپوزیشن لیڈر کا کہنا ہے کہ یہ نیتن یاہو کو تبدیل کرنے کا وقت ہے۔

حزب اختلاف کے رہنما یائر لاپڈ نے کہا ہے کہ اسرائیل کے وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو اور ان کی انتہائی دائیں بازو کی انتہا پسند کابینہ کو تبدیل کرنے کا وقت آ گیا ہے۔

ایکس پر جاری بیان میں انہوں نے کہا کہ ہمیں ایک قومی تعمیرنو حکومت قائم کرنے کی ضرورت ہے لیکوڈ اس کی قیادت کرے گا، نیتن یاہو اور انتہا پسندوں کی جگہ لے لی جائے گی۔

سیاستدان نے کہا کہ اسرائیلی فوج اور عوام 7 اکتوبر کے حملے کے بعد سے لچک دکھا رہے ہیں، لیکن “کمزور کڑی حکومت اور خاص طور پر وزیر اعظم ہیں”۔

لیپڈ کے تبصرے اسرائیل کی سیاسی اسٹیبلشمنٹ کے اندر بڑھتے ہوئے اختلاف کی تازہ ترین علامت ہیں۔ سخت ترین مسائل میں سے ایک نیتن یاہو کا حماس کے حملے کی وجہ بننے والی ناکامیوں کی ذمہ داری قبول کرنے سے انکار ہے تاہم، دوسروں کا کہنا ہے کہ تنازعہ ختم ہونے کے بعد اس معاملے سے نمٹا جانا چاہیے۔

جنگی کابینہ کے وزراء میں سے ایک بینی گانٹز نے پیر کو کہا کہ وزیر اعظم کو تبدیل کرنے کی کالیں “پاگلوں سے کم نہیں” تھیں۔

لیپڈ نے کہا میں یہ آوازیں سن رہا ہوں کہ یہ وقت نہیں ہے ہم نے 40 دن انتظار کیا، اب مزید وقت نہیں ہے۔ ہمیں اس وقت ایک ایسی حکومت کی ضرورت ہے جو سیکورٹی اور معیشت کے علاوہ کچھ نہیں کرے گی۔ ہم آنے والے سال میں ایک اور الیکشن کے متحمل نہیں ہو سکتے۔

Comments

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply