0

آخر کچھ افراد کو بہت پسینہ کیوں آتا ہے؟

اس ویڈیو کا متعدد افراد کو ہوتا ہے / تصاویر
اس ویڈیو کا متعدد افراد کو ہوتا ہے / تصاویر

موسم گرم ہو تو پسینہ تو ہر فرد کا بہت ہوتا ہے کیونکہ یہ جسم خود کو تھنڈا رکھنے کے نظام کا حصہ ہے۔

گرم موسم، ورزش، زیادہ مرچوں والی غذا، تناؤ اور دیگر متعدد مریضوں میں پسینے کا اخراج ہوتا ہے۔

لیکن جب جسم ٹھنڈا ہو جاتا ہے تو پسینہ بہنا رک جاتا ہے، تاہم کچھ افراد جن کا پسینہ مسلسل بہت زیادہ ہوتا ہے۔

اس کے لیے طبی زبان میں ہائپر ہائیڈروسیس کی اصطلاح استعمال کی جاتی ہے۔

عام طور پر ہر وقت پسینے کا اخراج کوئی خاص طبی مسئلہ نہیں ہوتا لیکن اس روزمرہ سے زندگی آپ کو متاثر کرتی ہے۔

تو آخر کچھ افراد کو بہت پسینہ کیوں آتا ہے؟

اس کا جواب سادہ نہیں بلکہ مختلف چیزوں کو دیکھنے کی ضرورت ہوتی ہے۔

اگر آپ کو بہت زیادہ پسینہ آتا ہے تو اس روزمرہ کی زندگی میں جذباتی اور مسائل سے ملاقات ہو سکتی ہے۔

بہت زیادہ پسینے کے اخراج کے 2 نتائج ہوتے ہیں، ایک پرائمری ہائپر ہائیڈروسیس جس کی کوئی واضح طبی وجہ نہیں ہوتی۔

دوسری قسم کی سیکنڈری ہائپر ہائیڈروسس، جو کسی بیماری جیسی بیماری، ہارمونز میں پہلی والی تبدیلیوں کے استعمال کے نتیجے میں ہوتی ہے۔

اس آواز کی چند تفصیل درج ذیل ہے۔

ہائیپر ہائیڈروسیس

اگر آپ کو کوئی بیماری نہیں ہے اور پھر بھی بہت زیادہ پسینے کا اخراج ہو رہا ہے تو اسے hyperhidrosis پر کہا جاتا ہے۔

اس کے شکار افراد کے بغلوں، نشستوں، ہتھیلی اور ایڑی جیسی ویڈیاں میں بہت زیادہ پسینہ۔

درحقیقت کم گرمی میں بھی بہت زیادہ پسینہ خارج ہوتا ہے اور بہت زیادہ وقت تک برقرار رہتا ہے۔

کئی بار تو گرمی یا کسی سرگرمی کے بغیر ہی پسینہ بہنے لگتا ہے جو پسینہ بنانے والے غدود سے بہت زیادہ متحرک ہونے کا نتیجہ ہوتا ہے۔

یہ کوئی پریشان کرنے والا مسئلہ نہیں ہوتا، روزمرہ کی زندگی ضرور متاثر ہوتی ہے۔

ہارمونز میں تبدیلیاں

درمیانی عمر کی خواتین میں جب ایسٹروجن نامی ہارمون کی سطح کم ہوتی ہے تو دماغ اس کے لیے کام کرنا مشکل ہے جو درجہ حرارت کو کنٹرول کرتا ہے۔

اس کے نتیجے میں خواتین کو بہت زیادہ پسینے کا سامنا کرنا پڑتا ہے کیونکہ دماغ کو سمجھ نہیں آتی کہ جسم کو ٹھنڈا رکھنے کی ضرورت ہے۔

دماغ

خاص طور پر اس وقت جب بل شوگر کی سطح پر بات ہوتی ہے۔

کئی بار بہت زیادہ خوشی کی ادائیگی بھی بہت زیادہ محسوس ہوتی ہے۔

کوئی بیماری

تپ دق (ٹی بی)، دل ورم اور دل کے بہت زیادہ انفیکشن محسوس ہوتے ہیں۔

مخصوص انداز

سکور آورٹ، آپس کی حمایت اور ہارمون آپ کو متعدد بار کے استعمال کے استعمال سے ساتیری hyperhidrosis کا اجلاس ہوتا ہے۔

دیگر طبی ڈاکٹر

جسم کے بہت سے دوسرے مسائل جیسے انزائٹی، ہارٹ اٹیک، خود کو ایمون امراض، خون کے کینسر، تھائی رائیڈ کے امراض، ایچ آئی وی اور ایڈز وغیرہ ان میں نمایاں ہیں۔

تناؤ

اگر بغیر کسی وجہ سے یہ بہت زیادہ مقدار میں پسینہ خارج ہونے سے آپ کی علامت بھی ہو سکتی ہے۔

یہ پسینہ جسم کو ٹھنڈا کرنے کے لیے خارج نہیں ہوتا بلکہ مشکل حالات سے لڑنے کے لیے جوابی ردعمل کا نتیجہ ہوتا ہے۔

موسم

یہ تو سب کو معلوم ہے کہ جب موسم گرم اور مرطوب ہوتا ہے تو گھر سے باہر نکلنے پر لوگ پسینے سے شرابور ہوتے ہیں، درجہ حرارت زیادہ ہوتا ہے پسنے کا اخراج بھی اتنا ہی زیادہ ہوتا ہے۔

اس کے علاوہ گرم مرطوب موسم میں پسینے کا بخارات بن کر اڑنا بھی مشکل ہوتا ہے۔

کیفین اور زیادہ مرچوں والی غذائیں

آپ کی غذا بھی اس بات کو ظاہر کرتا ہے، خوراک یا مشروبات سے مرکزی اعصابی نظام متحرک ہوتا ہے جو غدود کو کنٹرول کرنے کے لیے بھی پسی جاتا ہے۔

تو جن غذاؤں میں زیادہ مرچوں کا استعمال ہوتا ہے، ان سے یہ غدود بھی زیادہ متحرک ہوتا ہے۔

نوٹ: یہ مضمون طبی جریدوں میں شائع کی گئی تفصیلات پر، قارین اسباق سے اپنے معالج سے بھی ضروری ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply