0

خاتون پولیس کارکن سے مسلم ہراسگی پر صدر کا محتسب کو تحقیقات کا حکم

منصفانہ ٹرائل کا متقاضی ہے کہ ہر حق کو انصاف پر یقین ہو، عدالت نے انکو کمیشن پر اعتماد کا اظہار کیا: صدرِ ملی__فوٹو: فائل۔
منصفانہ ٹرائل کا متقاضی ہے کہ ہر حق کو انصاف پر یقین ہو، عدالت نے انکو کمیشن پر اعتماد کا اظہار کیا: صدرِ ملی__فوٹو: فائل۔

صدرِ محترم ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ انتخابی محتسب نے کہا کہ ہراسگی خاتون پولیس کارکن کی مِلی ہراسگی کی تحقیقات کرے اور 90 دن اندر کارروائی کرے۔

عارف علی نے کہا کہ منصفانہ ٹرائل ہر فرد کا غیر قانونی حق ہے، آئینی نہ صرف شکندہ ہے بلکہ حقوق کو بھی تحفظ فراہم کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہرصف کو انصاف پر یقین ہو، عدالتی کمیشن پر اعتماد کا اظہار کرتے ہیں۔

صدر عارف علوی نے کہا کہ انصاف یقینی بنانے کے لیے انکوائری کے ذمہ دار محتسب کو سونپنا مناسب ہے۔

واضح رہے کہ اسلام آباد پولیس کی ایک خاتون نے عورت پر جنسی ہراسانی کا الزام لگایا ہے۔

محتسب نے ازسر نو انکوائری کے لیے کیس اسلام آباد پولیس کو واپس بھجوایا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply