0

پشاور پولیس نے شہر میں شرپسندی لہرانے کی تصاویر جاری کی۔

پولیس کی جانب سے شہر میں ہنگامہ آرائی اور توڑ پھوڑ کرنے والے افراد کے لیے عوام سے مدد کی اپیل کی گئی ہے/ اسکرین گریب
پولیس کی جانب سے شہر میں ہنگامہ آرائی اور توڑ پھوڑ کرنے والے افراد کے لیے عوام سے مدد کی اپیل کی گئی ہے/ اسکرین گریب

پشاور پولیس نے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی گرفتاری کے بعد شہر میں پارک اور پتھراؤ کرنے والے افراد کی تصاویر اور سوشل میڈیا پر زور ڈالا۔

کیپیٹل کے پاس آپ کے اکاؤنٹس کی سٹیٹیو کے بارے میں کچھ لوگوں کو پسند کیا گیا ہے اور ویڈیو شیئر کی گئی ہیں جن میں سے چند افراد کو پولیس نے قبول کیا ہے۔

ان تصاویر کے ساتھ ٹوئٹ پولیس نے عوام سے اپیل کی ہے کہ پرامن احتجاج کرنے میں آپ کو ان لوگوں نے بردار افراد کی پولیس کی مدد کی ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی کی گرفتاری کے بعد مشتعل افراد کی جانب سے پشاور میں دو روز کے دوران ہنگامہ آرائی اور پھڑپھوڑ میں ملوث 659 افراد کو گرفتار کیا گیا۔

صوبائی حکومت کے مطابق مشتعل مظاہروں کے دوران 13 مہمانوں کے تحفظات کے 15 امل کو جلایا گیا جب کہ 12 مہمانوں کے محافظوں نے 17 گاڑیوں کو آگ لگائی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply