ڈی جی آئی ایس آئی سے متعلق سوال پر وزیراعظم کا قہقہہ

4

وزیراعظم نے ڈی جی آئی ایس آئی کے نوٹیفکیشن اور موجودہ بحران ختم ہونے سے متعلق سوال کا جواب نہیں دیا

وزیراعظم نے ڈی جی آئی ایس آئی کے نوٹیفکیشن اور موجودہ بحران ختم ہونے سے متعلق سوال کا جواب نہیں دیا

 اسلام آباد: پاکستانی خفیہ ادارے انٹر سروسز انٹلی جنس (آئی ایس آئی) کے نئے سربراہ کی تقرری سے متعلق سوال پر وزیراعظم عمران خان نے قہقہہ لگادیا۔

لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کی جگہ لیفٹیننٹ جنرل ندیم احمد انجم کو نیا ڈی جی آئی ایس آئی بنانے کی اطلاع سامنے آئی تھی تاہم تاحال ان کی تقرری نہیں ہوسکی۔

یہ بھی پڑھیں: 

وزیراعظم نے پی ٹی آئی اور اتحادی جماعتوں کی پارلیمانی پارٹی کا ہنگامی اجلاس آج طلب کیا۔ وزیراعظم آفس نے اراکین قومی اسمبلی کو ٹیلیفون کرکے فوری طور پر تحریک انصاف کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں شرکت کے لیے بلالیا۔ جس پر ارکان نے شکوہ کیا کہ اپنے حلقوں میں تھے اتنی جلدی کیسے پہنچیں۔

وزیراعظم جب اجلاس میں شرکت کے لیے پارلیمنٹ پہنچے تو صحافی نے ان سے سوال کیا کہ وزیراعظم صاحب ڈی جی آئی ایس آئی کا نوٹیفکیشن کب آئے گا اور موجودہ بحران کب ختم ہوگا؟۔ اس پر وزیراعظم عمران خان قہقہہ لگاتے ہوئے جواب دیے بغیر کمیٹی روم میں داخل ہوگئے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.