دنیا سے کورونا کب ختم ہوگا؟ عالمی ادارہ صحت نے آگاہ کردیا

27

گزشتہ دو برسوں سے جاری اس وبا نے دنیا بھر میں معمولات زندگی کو بری طرح سے متاثر کیا ہے، جبکہ کورونا ویکسین کی تیاری کے بعد یہ کہا جارہا  تھا کہ اب کورونا وبا پر نہ صرف قابو پایا جاسکے گا بلکہ اس کا خاتمہ بھی ممکن ہوسکے گا۔

لیکن موسم سرما کی اس موجودہ صورتحال میں دنیا بھرمیں کورونا کیسز میں ایک بارپھر تیزی سے اضافہ ہورہا ہے اورساتھ ہی وائرس بھی جنیاتی طور پر اپنی ہیئت تبدیل کر رہاہے جس سے بچاؤ کے لئے ویکسین کے بوسٹرڈوزبھی لگائی جارہی ہے، اور کئی نئی ویکسین کی تیاری بھی جاری ہے تاکہ اس وبا کو کسی طرح مزید پھیلنے سے روکا جاسکے۔

تاہم موجودہ حالات کو دیکھتے ہوئے عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے تشویش کا اظہارکیا ہے، اور کہا کہ کورونا وبا کا خاتمہ ابھی بہت دور ہے۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے سربراہ کے سربراہ ڈیڈروس ایڈہام نوم نے دنیا بھر میں کورونا کے کیسز میں اضافے کے پیش نظراس وبا کے خاتمے کے بارے میں کہا ہے کہ یہ ابھی دور ہے کیونکہ یہ وائرس تیزی سے دنیا بھر میں پھیل رہا ہے، برازیل، جرمنی اور فرانس میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ریکارڈ کیسز سامنے آئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کورونا وبا انسانوں کے ساتھ اب جانوروں کو متاثر کر رہی ہے اورساتھ ہی اس کی نئی قسم اومیکرون کے پھیلاؤکے سبب مختلف ممالک میں نئی پابندیاں عائد کی جارہی ہیں۔

ڈیڈروس کا اس ضمن میں مزید کہنا تھا کہ دنیا بھر میں بوسٹر ڈوز میں ریکارڈ اضافہ بھی کیاگیا ہے تاکہ عوام کو اس سے تحافظ فراہم کیا جاسکے، یورپ کورونا کے نئے کیسز کے اضافے کے ساتھ ایک بار پھروائرس کا مرکز بن گیا ہے، کورونا کی اس نئی قسم کو بھی کم نہیں سمجھنا چاہئے یہ قسم بھی کسی حد تک خطرناک ہے۔

عالمی ادارہ صحت کے سربراہ کا کہناہے کہ کورونا کی نئی قسم اومیکرون اگرچہ شدت میں کم ہے لیکن یہ بھی خطرناک ثابت ہوسکتی ہے، ساتھ ہی انہوں نے یورپ کے لئے پیشگوئی کی کہ رواں برس مارچ تک یہاں کی آدھی آبادی اومیکرون کا شکار ہوسکتی ہے اور اسپتالوں میں ہنگامی صورتحال کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

واضح رہے کہ عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل کا یہ بھی کہنا تھا کہ یہ وائرس اب چھوٹے بڑے جانوروں کو بھی متاثر کر رہا ہے، جبکہ چڑیا گھر کے شیروں میں اس وائرس کی تصدیق کی جاچکی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.