جسم میں کیشیم کی کمی دور کرنے والی غذائیں

11

انسانی جسم کی بہتر نشونما کے لئے ہڈیوں کا مضبوط ہونا اولین شرط ہے۔ عمر بڑھنے کے ساتھ ساتھ جسم میں ہڈیوں کے کمزور ہونے کو ایک قدرتی عمل تصور کیا جاتا ہے، یہ اور بات ہے کہ ایسا بلکل نہیں ہے۔اگر آپ چند غذاؤں کا باقاعدگی سے استعمال کریں تو بڑھاپے میں  بھی ہڈیوں کو مضبوط رکھا جاسکتا ہے۔ ہڈیوں کو مضبوط بنانے میں وٹامن ڈی اور کیلشیم بہت اہم کردار ادا کرتے ہیں۔

دودھ

دودھ کیلشیم اور وٹامن ڈی سے بھرپور ایک مکمل غذا ہے ۔ جو ہڈیوں کی مضبوطی کے لئے نہایت نفع بخش ہے۔

بادام

بادام کو اپنی روز مرہ کی خوراک میں شامل کر کے آپ صحت مند و مضبوط ہڈیاں پا سکتے ہیں۔کیلشیم کے علاوہ بادام سے چکنائی بھی حاصل ہو تی ہے۔

پنیر

پنیر کیلشیم سے بھرپور ہوتا ہے لیکن اس کا معتدل استعمال ہی صحت مند ہڈیوں کی ضمانت بن سکتا ہے ڈیڑھ اونس پنیر میں تیس فیصد سے زائد کیشیم موجود ہوتا ہے۔

انڈہ

ایک انڈے میں صرف چھ فیصد وٹامن ڈی ہوتا ہے۔ لیکن یہ وٹامن ڈی کے حصول کا ایک نہایت آسان ذریعہ ہے جب کی اس کی زردی مختلف وٹامنز سے بھر پورہوتی ہے۔

دہی

دہی میں کیلشیم کے ساتھ وٹامن ڈی بھی بہ کثرت پایا جاتا ہے۔ایک کپ دہی میں  تیس فیصد کیلشیم اور بیس فیصد وٹامن ڈی موجود ہوتا ہے۔ جو ان دونوں وٹامنز کی ایک دن کی جسمانی ضرورت کو پورا کر دیتا ہے۔

پالک

پالک میں نہ صرف پچیس فیصد کیلشیم ہوتا ہے بلکہ یہ فائبر، آئرن اور وٹامن اے سے بھی برپور ہوتا ہے۔ لہذا اپنی ہڈیوں کو مضبوط بنانے کے لئے ہفتے میں کم از کم ایک بار پالک ضرور غذا میں شامل رکھیں۔

مالٹے کا جوس

 تحقیقات سے یہ بات ثابت ہو چکی ہے کہ مالٹے کے جوس میں موجود اسکوربک نامی ایسڈ جسم میں کیشیم کو جذب کرنے کی صلاحیت بڑھا دیتا ہے۔ گو اس کے تازہ جوس میں براہ راست کیلشیم یا وٹامن ڈی تو نہیں ہوتا لیکن یہ ان اجزاء کے حصول کو آسان بنا دیتا ہے۔

سیلمن مچھلی

سیلمن مچھلی آپ کی ہڈیوں کے لئے بہترین غذا ہے۔ سیلمن مچھلی میں وٹامن ڈی اور کیلشیم کی وافر مقدار موجود ہوتی ہے، اس کے علاوہ اس میں اومیگا تھری بھی موجود ہوتا ہے جو آپ کے دل کی صحت کے لئے نہایت مفید مانا جاتا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.