0

برطانیہ میں واٹس ایپ سروس ختم ہونے کے قریب

واٹس ایپ اور عوام حکومت کے آن لائن سیفٹی بل کے درمیان تنازعہ ہے / تصاویر
واٹس ایپ اور عوام حکومت کے آن لائن سیفٹی بل کے درمیان تنازعہ ہے / تصاویر

برطانیہ میں ہمارے لوگوں کے لیے واٹس ایپ کو ختم ہونے کا ایک حصہ تک رسائی حاصل کرنے کے لیے حکومت اور میجنگ کے درمیان تنازعات کے بارے میں بات کر سکتے ہیں۔

اسلام آباد حکومت کی آن لائن سیفٹی بل کے تحت کسی نامی کمیونٹی کو سوشل نیٹ ورکس کو اختیار کرنے کا اختیار دیا جائے تاکہ جنسی کنٹرول کیا جائے یا بچوں کے اسٹیسٹی پر مبنی مواد کی روک کمیٹی آف پاکستان۔

آزادی میڈیا واٹس ایپ کے صارفین کے ڈیٹا کو اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن (ای 2 ای ای) تحفظ حاصل ہے جس کے لیے کسی صارف کے پیغامات تک رسائی ممکن ہے۔

تو اس قانون سازی سے میٹا کی زیرملکیت ایپ کو خوش آمدید کہتے ہیں۔

اپریل میں واٹس ایپ اور سگنلنگ دیگر میسجنگ کی جانب سے جاری ایک خط میں کہا گیا تھا کہ انکرپشن کے تحفظ کے صارفین کو کوئی فائدہ نہیں ہے اور صارفین کی جانب سے نجی پیغامات کی اسکیننگ پر زور دیا۔ کیا جائے گا، جس کے نتیجے میں صارفین کو متاثر کیا جائے گا۔

اس خط میں کہا گیا تھا کہ اگر قانون پر عملدار تو برطانیہ سے باہر جانے والے صارفین کو ترجیح دی جائے۔

مارچ میں واٹس ایپ کے سربراہ ول کیتھ کارٹ نے ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ ہم برطانیہ میں واٹس ایپ پر آپ کو قبول کر لیں گے تاہم اس پر کسی قسم کا کاوٹا نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر ہمیں محسوس ہوتا ہے کہ صارفین کو طاقت کے استعمال کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے تو ہم برطانیہ سے چلے جائیں گے، کیوں کہ ہمارے تحفظ کے بارے میں صارفین کا اعتماد بحال رکھنے کے لیے اور ٹو اینڈ انکرپشن انتہائی ضروری ہے۔ ضروری

ان کا کہنا تھا کہ برطانیہ میں واٹس ایپ صارفین کو استعمال کرنے کے لیے دنیا بھر کے صارفین کے لیے بھی مسائل کا سبب بنتا ہے اور دیکھا جائے تو یہ انتہائی اہم سوال ہے جس پر پوری توجہ دینا چاہیے کہ ایسا کوئی طریقہ نہیں ہے۔ صرف دنیا کے ایک ملک میں تبدیلی لائیک۔

اس کے بارے میں بلاول کی رائے ملی جلی کی طرف سے، کچھ کی طرف سے بل کی مخالفت کی جا رہی ہے جبکہ دیگر حمی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply